بیمار بچوں کے لیے سینٹرل وینس کیتھیٹر (CVC) سے متعلق

اشتراک کریں
مطالعے کا وقت: بارے میں 22 منٹس

یہ معلومات CVC لگانے کے طریقہ کار کی وضاحت کرتی ہیں بشمول تیار کرنے کا طریقہ اور آپ کیا توقعات رکھ سکتے ہیں۔ اس میں CVC کی دیکھ بھال کا طریقہ بھی بتایا گیا ہے۔ اس ریسورس میں، ’’آپ‘‘ اور ’’آپ کا‘‘ کی اصطلاحات آپ یا آپ کے بچے کے لیے ہیں۔

CVC کے بارے میں

CVC ایک کیتھیٹر (لمبی، لچکدار ٹیوب) ہے جو آپ کے سینے کی نس میں ڈالی جاتی ہے۔ CVC کی متعدد اقسام ہیں۔ آپ کا ڈاکٹر فیصلہ کرے گا کہ آپ کے لیے کون سی قسم بہترین ہے۔

سب CVC میں ایک مرکزی کیتھیٹر ہوتا ہے جو آپ کے دل کے قریب ایک بڑی نس میں ڈالا جاتا ہے۔ جسم سے باہر مرکزی کیتھیٹر 1، 2 یا 3 چھوٹی ٹیوبوں میں تقسیم ہو جاتا ہے جنہیں لومنز (lumens) کہتے ہیں۔ ہر لومن میں ایک کلیمپ، نیڈل لیس کنیکٹر (جسے کلیو بھی کہا جاتا ہے) اور سرے پر ڈس انفیکشن کیپ ہوتی ہے (شکل 1 دیکھیں)۔

شکل 1۔ سینٹرل وینس کیتھیٹر (CVC)

شکل 1۔ سینٹرل وینس کیتھیٹر (CVC)

CVC کے استمعال سے آپ انجکشن سے ہونے والے زخموں سے بچ سکتے ہیں۔ آپ کی کیئر ٹیم ان مقاصد کے لیے CVC استعمال کر سکتی ہے:

  • آپ کے خون کا نمونہ حاصل کرنے کے لیے
  • آپ کو لیکویڈ کی فراہمی کے لیے
  • آپ کو کیموتھراپی اور دیگر ادویات دینے کے لیے
  • خون کی منتقلی کے لیے
  • آپ کو نس (IV) کے ذریعے غذا دینے کے لیے

آپ کا CVC آپ کے جسم میں چند سالوں تک بھی رہ سکتا ہے۔ یہ آپ کے پورے علاج کے دوران اپنی جگہ پر لگا رہے گا۔ جب اس کی مزید ضرورت نہیں رہے گی تو آپ کا ڈاکٹر CVC ہٹا دے گا۔

CVC کی موجودگی آپ کو اپنی معمول کی سرگرمیوں سے نہیں روکتی جیسے اسکول جانا، کام کرنا، نہانا اور ہلکی ورزش کرنا۔ مزید معلومات کے لیے “CVC کی دیکھ بھال” سیکشن پڑھیں۔

CVC لگوانے کے لیے ایک پروسیجر کروانا پڑتا ہے۔ آپ کی نرس بتائے گی کہ آپ نے پروسیجر کے لیے کیسے تیار ہونا ہے۔ پروسیجر کے بعد وہ آپ کو اپنے CVC کی دیکھ بھال کرنے کا طریقہ بھی سکھائیں گے۔ آپ یہ سب سیکھیں گے:

  • اپنی ڈریسنگ (بینڈیج) تبدیل کرنا
  • اپنے نیڈل لیس کنیکٹر تبدیل کرنا
  • اپنی ڈس انفیکشن کیپس تبدیل کرنا (جیسے SwabCaps®)
  • CVC کو فلش کرنا

آپ کے ساتھ آپ کا خیال رکھنے والا خاندان کا کوئی فرد یا دوست بھی یہ سب سیکھ سکتا ہے۔ گھر جانے کے بعد اپنے CVC کی دیکھ بھال کے سٹیپس یاد رکھنے کے لیے اس ریسورس کا استعمال کریں۔

آپ کے طبی عمل سے پہلے

اپنی دوائیوں کے بارے میں پوچھیں

پروسیجر سے پہلے کچھ دوائیوں کا استعمال بند کرنا ضروری ہے۔ اپنے ڈاکٹر سے اس بارے میں بات کریں کہ کون سی دوائیوں کا استمعال بند کرنا آپ کے لیے محفوظ ہے۔ ذیل میں کچھ عمومی مثالیں ہیں۔

Anticoagulants (خون پتلا کرنے والی)

اگر آپ خون پتلا کرنے والی دوا (جو آپ کے خون کے جمنے کے طریقے کو متاثر کرتی ہے) لیتے ہیں تو اس ڈاکٹر سے جو آپ کا پروسیجر کر رہا ہے پوچھیں کہ آپ کو کیا کرنا چاہیے۔

خون پتلا کرنے والی ادویات کی مثالیں۔
اسپرینٹنزاپرین (Innohep®)پراسگرل (Effient®)
وارفرین (Jantoven® or Coumadin®)اینوکساپرین (Lovenox®)ٹکلوپیڈین (Ticlid®)
ڈالٹپرین (Fragmin®)کلوپی ڈوگرل (Plavix®) 
ہیپرینسلوسٹازول (Pletal®) 

ذیابیطس کی ادویات

اگر آپ ذیابیطس کے لیے انسولین یا دیگر ادویات لیتے ہیں تو تجویز کرنے والے ڈاکٹر سے پوچھیں کہ پروسیجر کی صبح آپ کو کیا کرنا چاہیے۔ ہو سکتا ہے کہ آپ کو پروسیجر سے پہلے اپنی ادویات کی خوراک تبدیل کرنی پڑے۔

اسپرین اور دیگر نان سٹیرائد اینٹی انفلیمیٹری ڈرگس (NSAIDs)

اگر آپ اسپرین یعنی ایسی دوا جس میں اسپرین ہو یا NSAID جیسے ibuprofen (Advil® یا Motrin®) لیتے ہیں تو اپنے ڈاکٹر سے پوچھیں کہ کیا آپ کو پروسیجر سے پہلے اس کا استعمال بند کرنے کی ضرورت ہے یا نہیں۔ اس کا انحصار اس بات پر ہو گا کہ آپ یہ دوا کس وجہ سے لے رہے ہیں۔

مزید معلومات کے لیے How To Check if a Medicine or Supplement Has Aspirin, Other NSAIDs, Vitamin E, or Fish Oil پڑھیں۔

وٹامن E اور دیگر غذائی سپلیمنٹس

اگر آپ وٹامن E لیتے ہیں تو پروسیجر سے 7 دن پہلے یا اپنے ڈاکٹر کی ہدایت کے مطابق اس کا استعمال بند کر دیں۔

اگر آپ ملٹی وٹامن، ہربل ریمیڈیز یا کوئی اور غذائی سپلیمنٹ لیتے ہیں تو اپنے ڈاکٹر سے پوچھیں کہ کیا آپ اس کا استعمال جاری رکھ سکتے ہیں۔

اگر آپ بیمار ہیں تو ہمیں بتائیں

پروسیجر سے پہلے بیمار (جیسے بخار، نزلہ، گلے کی سوزش یا فلو) ہونے کی صورت میں اپنے ڈاکٹر کو کال کریں۔

پروسیجر سے ایک دن قبل

پروسیجر کا وقت نوٹ کریں

عملے کا رکن آپ کے پروسیجر سے ایک دن پہلے آپ کو کال کرے گا۔ اگر آپ کا پروسیجر پیر کو ہونا ہے تو وہ آپ کو جمعہ کو کال کریں گے۔ اگر شام 4:00 بجے تک کوئی کال نہ آئے تو 212-639-5948 پر خود کال کریں۔

عملے کا رکن آپ کو بتائے گا کہ پروسیجر والے دن آپ کو کس وقت ہسپتال پہنچنا ہے۔ وہ آپ کو یاددہانی بھی کروائیں گے کہ آپ کو کہاں جانا ہے۔ یہ درج ذیل میں سے کوئی جگہ ہو گی:

  • پیڈیاٹرک ایمبولیٹری کیئر سینٹر (PACC)
    1275 یارک ایونیو (ایسٹ 67th اور ایسٹ 68th سٹریٹس کے درمیان)
    نیویارک، نیویارک 10065
    لفٹB کے ذریعے 9ویں منزل پرجائیں۔
  • پریسرجیکل سینٹر (PSC) چھٹی منزل پر
    1275 یارک ایونیو (ایسٹ 67th اور ایسٹ 68th سٹریٹس کے درمیان)
    نیویارک،10065 نیویارک
    لفٹB کے ذریعے 9ویں منزل پرجائیں۔

‌ 
اپنے پروسیجر سے ایک رات پہلے آدھی رات کے بعد کوئی ٹھوس غذا نہ کھائیں۔ اس میں سخت ٹافی اور گم شامل ہیں۔

آپ کے پروسیجر کا دن

آپ کے طبی عمل سے پہلے پانی پینے کی ہدایات

آپ آدھی رات کے بعد پینے کا فارمولا، ماں کا دودھ اور شفاف مشروبات رکھ سکتی ہیں۔ درج ذیل جدول میں دی گئیں ہدایات پر عمل کریں۔ اپنے دانتوں کو برش کرنا اور پانی کے چھوٹے سے گھونٹ کے ساتھ اپنی ادویہ لینا ٹھیک ہے۔

مشروب کی قسمپینے کی مقدارپینا کب روکنا ہوگا
فارمولاکوئی بھی مقدارآپ کی آمد کے طے شدہ وقت سے 6 گھنٹے پہلے فارمولا پینا روک دیں۔
ماں کا دودھکوئی بھی مقدارآپ کی آمد کے طے شدہ وقت سے 4 گھنٹے پہلے ماں کا دودھ پینا روک دیں۔
شفاف مشروبات جیسے کہ پانی، گودے کے بغیر پھل کا جوس، کاربونیٹڈ (فزی) مشروبات، دودھ کے بغیر چائے اور دودھ کے بغیر کوفی
  • 0 سے 3 سال کی عمر: 4 اونسز (120 ملی لیٹرز) تک
  • 4 سے 8 سال کی عمر: 6 اونسز (180 ملی لیٹرز) تک
  • 9 سے 13 سال کی عمر: 8 اونسز (240 ملی لیٹرز) تک
  • 13 سال اور اس سے زائد کی عمر: 12 اونسز (360 ملی لیٹرز) تک
آپ کی آمد کے طے شدہ وقت سے 2 گھنٹے پہلے شفاف مشروبات پینا روک دیں۔


آپ کی آمد کے طے شدہ وقت سے 2 گھنٹے پہلے کچھ بھی نہ پئیں۔ اس میں فارمولا، ماں کا دودھ، پانی اور دیگر شفاف مشروبات شامل ہیں۔

ہدایات کے مطابق اپنی دوائیاں لیں

اگر ڈاکٹر آپ کو پروسیجر کی صبح کچھ دوائیاں لینے کی اجازت دے تو صرف وہی دوائیں پانی کے ایک گھونٹ کے ساتھ لیں۔ آپ جو دوائیاں لیتے ہیں ان کے لحاظ سے یہ آپ کی صبح کی معمول کی دوائیوں میں سے کچھ یا ساری دوائیاں ہو سکتی ہے۔

نہانا

اپنے معمول کے صابن، شیمپو اور کنڈیشنر کے ساتھ نہائیں۔ نہانے کے بعد اپنا جسم صاف تولیے سے خشک کریں اور صاف کپڑے پہنیں۔ کوئی لوشن، کریم، ڈیوڈورنٹ، میک اپ، پاؤڈر، پرفیوم یا کولون نہ لگائیں۔

اہم باتیں

  • صاف اور آرام دہ لباس پہنیں۔
  • اگر آپ کانٹیکٹ لینز استعمال کرتے ہیں تو اس کی بجائے عینک استعمال کریں۔ پروسیجر کے دوران کانٹیکٹ لینز کا استعمال آپ کی آنکھوں کو نقصان پہنچا سکتا ہے۔
  • کوئی دھاتی چیز نہ پہنیں۔ تمام زیورات اتار دیں، بشمول باڈی پیئرسنگ۔ آپ کے پروسیجر کے دوران استعمال ہونے والے آلات دھات کو چھونے کی صورت میں جلنے کا سبب بن سکتے ہیں۔
  • قیمتی اشیاء گھر چھوڑ کر آئیں۔
  • اگر آپ کو ماہواری ہو رہی ہو تو سینیٹری پیڈ استعمال کریں ٹیمپون نہیں۔ اگر ضرورت ہو تو آپ کو ڈسپوزایبل انڈرویئر کے ساتھ ساتھ ایک پیڈ بھی دیا جائے گا۔

کیا کیا ساتھ لانا چاہیے

  • وہ ادویات جو آپ گھر پر لیتے ہیں، بشمول اوور دی کاؤنٹر اور ڈاکٹر کی تجویز کردہ ادویات، پیچز اور کریمیں۔
  • سانس کے مسائل کی ادویات (جیسے انہیلر)، اگر آپ لیتے ہیں تو۔
  • سینے کے درد کی ادویات، اگر آپ لیتے ہیں تو۔
  • عینک یا کانٹیکٹ لینز کا کیس۔
  • آپ کا ہیلتھ کیئر پراکسی فارم اور دیگر پیشگی ہدایات، اگر آپ نے مکمل کر لیے ہیں تو۔
  • نیند کی کمی کے لیے آپ کی سلیپنگ ڈیوائس (جیسے CPAP یا BiPAP)، اگر آپ کے پاس ہے تو۔
  • یہ ریسورس۔ آپ اسے پروسیجر کے بعد اپنے CVC کی دیکھ بھال کا طریقہ سیکھنے کے لیے استعمال کر سکتے ہیں۔

Where to park

MSK’s parking garage is on East 66th Street between York and 1st avenues. If you have questions about prices, call 212-639-2338.

To get to the garage, turn onto East 66th Street from York Avenue. The garage is about a quarter of a block in from York Avenue. It’s on the right (north) side of the street. There’s a tunnel you can walk through that connects the garage to the hospital.

There are other parking garages on:

  • East 69th Street between 1st and 2nd avenues.
  • East 67th Street between York and 1st avenues.
  • East 65th Street between 1st and 2nd avenues.

ہسپتال پہنچنے کے بعد

ہسپتال پہنچنے کے بعد (اگر آپ PACC جا رہے ہیں تو) 9th فلور اور (اگر PSC جا رہے ہیں) تو 6th فلور پر جانے کے لئے B لفٹ لیں۔

عملے کے بہت سے ارکان آپ سے آپ کا نام، اس کے سپیلنگ اور تاریخ پیدائش بتانے کے لیے کہیں گے۔ یہ آپ کے تحفظ کے لیے ہے۔ ہو سکتا ہے کہ ایک جیسے یا ملتے جلتے نام والے افراد ایک ہی دن پروسیجر کروا رہے ہوں۔

پروسیجر کے لیے لباس تبدیل کرنے کے لیے آپ کو ہاسپٹل گاؤن، روب اور نان سکڈ موزے فراہم کیے جائیں گے۔

نرس سے ملیں۔

پروسیجر سے پہلے آپ ایک نرس سے ملیں گے۔ اسےآدھی رات کے بعد لی گئی کسی بھی دوائی (بشمول پیچز اور کریمیں) کی خوراک اور وقت بتائیں۔

آپ کی نرس آپ کی نس(IV) لائن لگائے گی۔ IV لائن کے ذریعے آپ کو مائع، پروسیجر کے دوران سکون آور دوا یا دونوں دیئے جا سکتے ہیں۔

اینستھیزیولوجسٹ سے ملیں

پروسیجر سے پہلے آپ ایک اینستھیزیولوجسٹ سے بھی ملیں گے۔ وہ آپ کے ساتھ:

  • آپ کی میڈیکل ہسٹری کا جائزہ لے گا۔
  • آپ سے پوچھے گا کہ کیا آپ کو ماضی میں اینستھیزیا سے کوئی مسئلہ ہوا ہے بشمول متلی (ایسا محسوس ہونا جیسے آپ قے کر دیں گے) یا درد۔
  • سرجری کے دوران آپ کے آرام اور حفاظت کے بارے میں بات کرے گا۔
  • آپ کو بتائے گا کہ آپ کو کس قسم کا اینستھیزیا دیا جائے گا۔
  • اینستھیزیا سے متعلق آپ کے سوالات کے جواب دے گا۔

پروسیجر کے لیے تیار ہو جائیں

پروسیجر شروع ہونے سے قبل انتظار کے دوران ایک یا دو لوگ آپ کے پاس رہ سکتے ہیں۔ پروسیجر کا وقت ہونے پر عملے کا ایک رکن آپ کے مہمانوں کو ویٹنگ ایریا میں لے جائے گا۔

آپریٹنگ روم میں جانے سے پہلے آپ کے لیے آلہ سماعت، مصنوعی اعضا، وگ اور مذہبی اشیاء اتارنا ضروری ہے اگر آپ کے پاس ہیں تو۔

آپ چل کر آپریٹنگ روم میں جائیں گے یا عملے کا کوئی رکن آپ کو سٹریچر پر لے جائے گا۔ آپریٹنگ روم ٹیم کا ایک رکن آپریٹنگ بیڈ پر لیٹنے میں آپ کی مدد کرے گا۔ جب آپ آرام سے لیٹ جائیں گے تو اینستھیزیولوجسٹ آپ کو IV لائن کے ذریعے اینستھیزیا دے گا اور آپ سو جائیں گے۔

آپ کے طبی عمل کے دوران

سب سے پہلے ڈاکٹر آپ کو کالر بون کے قریب لوکل اینستھیٹک کا انجکشن (شاٹ) دے گا۔ لوکل اینستھیٹک ایک دوا ہے جو آپ کے جسم کے ایک حصے کو بے حس کر دیتی ہے۔ اس سے پروسیجر کے بعد آپ کو درد محسوس نہیں ہو گا۔

اس کے بعد ڈاکٹر 2 چھوٹے چیرے (سرجیکل کٹس) لگائے گا جنہیں انسرشن سائٹ اور ایگزٹ سائٹ کہا جاتا ہے۔

  • انسرشن سائٹ وہ جگہ ہے جہاں سے CVC آپ کی رگ میں داخل ہو گا۔ یہ چیرا آپ کی کالر بون کے بالکل نیچے ہو گا۔
  • ایگزٹ سائٹ وہ جگہ ہے جہاں سے CVC آپ کے جسم سے باہر نکلے گا۔ یہ چیرا انسرشن سائٹ سے چند انچ نیچے ہو گا۔

اس کے بعد ڈاکٹر CVC کا ایک سرا انسرشن سائٹ کے ذریعے آپ کی نس میں ڈالے گا۔ وہ اسے آپ کی جلد کے نیچے سے گزارتے ہوئے ایگزٹ سائٹ سے باہر نکال دے گا۔ CVC آپ کی جلد کے نیچے سے گزارنے کی وجہ سے حرکت نہیں کرے گا۔

CVC لگانے کے بعد ڈاکٹر Dermabond® (سرجیکل گلو) یا Steri-Strips (سرجیکل ٹیپ) سے انسرشن سائٹ کو بند کر دے گا۔ اور ایگزٹ سائٹ کو سوچر (ٹانکے) سے بند کر دے گا۔ وہ CVC کو بھی ایگزٹ سائٹ پر آپ کی جلد کے ساتھ سی دے گا تا کہ یہ آپ کی جلد کے نیچے سیٹ ہونے تک اپنی جگہ پر قائم رہے۔ اس کے بعد وہ 2 ڈریسنگز لگائے گا: 1 ڈریسنگ آپ کی انسرشن سائٹ پر اور دوسری ایگزٹ سائٹ اور CVC پر۔

آپ کے طبی عمل کے بعد

جب آپ اپنے پروسیجر کے بعد بیدار ہوں گے تو پوسٹ اینستھیزیا کیئر یونٹ (PACU) میں ہوں گے۔ جب آپ وہاں آرام دہ ہو جائیں گے تو ایک نرس آپ کے مہمانوں کو آپ کے پاس لے آئے گی۔

نرس آپ کے ٹمپریچر، نبض، بلڈ پریشر اور آکسیجن لیول پر نظر رکھے گی۔ مکمل طور پر بیدار ہونے کے بعد آپ کو مشروب اور ہلکا ناشتہ دیا جائے گا۔

ہسپتال سے ڈسچارج ہونے سے قبل نرس آپ کو اور آپ کی نگہداشت کرنے والے کو ڈریسنگ کی دیکھ بھال کا طریقہ سکھائے گی۔ آپ کو ایمرجنسی کٹ بھی فراہم کی جائے گی۔ ایمرجنسی کٹ میں یہ اشیاء ہوں گی:

  • 2 ٹوتھ لیس کلیمپ
  • 1 ڈریسنگ چینج کٹ
  • الکوحل پیڈ
  • میڈیکل (پیپر) ٹیپ
  • آپ کے ڈاکٹر کا آفس کا اور ایمرجنسی ٹیلی فون نمبر

اپنی ایمرجنسی کٹ ہر وقت اپنے ساتھ رکھیں۔ اگر آپ کا کیتھیٹر لیک ہو رہا ہو، آپ کی ڈریسنگ گندی ہو جائے یا اتر جائے یا آپ کا نیڈل لیس کنیکٹر یا ڈس انفیکشن کیپ گر جائے تو آپ کو ایمرجنسی کٹ کی ضرورت پڑے گی۔

اپنے کٹس کا خیال رکھنا

آپ کو کٹس کے ارد گرد تکلیف محسوس ہو گی۔ آپ کی کیئر ٹیم آپ کی ضروریات کی بنیاد پر درد کنٹرول کرنے کا پلان بنائے گی۔ اگر آپ کو درد میں افاقہ نہ ہو تو انہیں بتائیں۔

پروسیجر کے بعد پہلے 24 گھنٹے (1 دن) تک ڈریسنگ کو خشک رکھنا ضروری ہے۔ 24 گھنٹے بعد ڈریسنگ تبدیل کرنا ضروری ہے۔ مزید معلومات کے لیے “ڈریسنگ تبدیل کرنا، نیڈل لیس کنیکٹرز اور ڈس انفیکشن کیپس” سیکشن پڑھیں۔

آپ پروسیجر کے 2 دن بعد انسرشن سائٹ سے ڈریسنگ اتار سکتے ہیں۔ اور اب آپ نئی ڈریسنگ کی ضرورت نہیں ہو گی۔ اگر سٹیری سٹرپس ہیں تو انھیں چھوڑ دیں جب تک وہ خود نہ اتر جائیں۔ ایسا آپ کے پروسیجر کے تقریباً 3 سے 5 دن بعد ہونا چاہیے۔ CVC کو کور کرنے والی ڈریسنگ نہ اتاریں۔

آپ کا ڈاکٹر آپ کو بتائے گا کہ جب آپ کے کٹس ٹھیک ہو رہے ہوں تو اس دوران آپ کون سی ایکسرسائز اور کام کر سکتے ہیں۔ بھاری ایکسرسائز (جیسے دوڑنا، جاگنگ کرنا یا وزن اٹھانا) شروع کرنے سے پہلے ڈاکٹر سے ضرور مشورہ کریں۔

CVC کی دیکھ بھال

  • اپنے CVC کو پانی کے اندر (جیسے باتھ ٹب یا سوئمنگ پول میں) نہ رکھیں۔
  • جب CVC استعمال میں نہ ہو تو لومنز کو کلیمپ لگا کر رکھیں۔
  • CVC کو محفوظ رکھیں اور کھچنے سے بچائیں۔ اپنی نرس سے CVC کو محفوظ رکھنے کا بہترین طریقہ معلوم کریں۔
  • ایسے رابطوں، کھیلوں اور سرگرمیوں (جیسے فٹ بال، ساکر اور رف ہاؤسنگ) سے پرہیز کریں جو آپ کے CVC پر اثر انداز ہو سکتی ہوں۔ کوئی بھی سرگرمی شروع کرنے سے پہلے اپنے ڈاکٹر سے ضرور پوچھیں۔ کپڑے تبدیل کرتے ہوئے محتاط رہیں اور CVC کو کھچنے سے بچائیں۔
  • ہر روز ایگزٹ سائٹ کو ان چیزوں کے لیے چیک کریں:
    • سرخی
    • نرمی
    • لیکج
    • سوجن
    • جریان خون

ان میں سے کوئی بھی علامت نظر آئے تو اپنے ڈاکٹر کو کال کریں۔ آپ کو انفیکشن ہو سکتا ہے۔

CVC لیک ہونے کی صورت میں کیا کرنا چاہیے

  1. لیک کے اوپر CVC کو کلیمپ لگا دیں۔ اگر ہو سکے تو سفید کلیمپ کو ٹیوب پر لے آئیں تاکہ یہ لیک کے اوپر ہو۔ اگر آپ سفید کلیمپ استعمال نہیں کر سکتے تو اپنی ایمرجنسی کٹ سے ٹوتھ لیس کلیمپ استعمال کریں۔
  2. الکوحل پیڈ سے لیک ہونے والی جگہ صاف کریں۔
  3. میڈیکل ٹیپ سے لیک ہونے والی جگہ کور کریں۔
  4. فوراً اپنے ڈاکٹر کو کال کریں۔ عموما CVC کومرمت کیا جا سکتا ہے۔

CVC کی ڈریسنگ خراب، ڈھیلی، گندی یا گیلی ہو تو کیا کرنا چاہیے

اپنی ڈریسنگ فوراً تبدیل کریں۔ “ڈریسنگ تبدیل کرنا، نیڈل لیس کنیکٹرز اور ڈس انفیکشن کیپس” سیکشن میں درج ہدایات پر عمل کریں۔

اگر نیڈل لیس کنیکٹر گندا ہو جائے یا گر جائے تو کیا کرنا چاہیے

  • اگر نیڈل لیس کنیکٹر گندا ہو جائے تو اسے تبدیل کر دیں۔ “نیڈل لیس کنیکٹرز اور ڈس انفیکشن کیپس کو تبدیل کرنے کا طریقہ” سیکشن میں فراہم کردہ ہدایات پر عمل کریں
  • اگر آپ کا نیڈل لیس کنیکٹر گر جائے تو اسے کچرے میں پھینک دیں۔ اسے دوبارہ لومن پر نہ لگائیں۔ درج ذیل ہدایات پر عمل کرتے ہوئے نیا نیڈل لیس کنیکٹر لگائیں۔
    1. اپنی چیزیں نکالیں۔ آپ کو ان چیزوں کی ضرورت ہو گی:
      • 2 الکوحل پیڈ
      • ایک نیا نیڈل لیس کنیکٹر
      • ایک نئی ڈس انفیکشن کیپ
    2. اس بات کو یقینی بنائیں کہ لومن پر لگا ہوا کلیمپ بند ہے
    3. الکوحل پیڈ استعمال کرتے ہوئے اپنے نان ڈومیننٹ ہاتھ (جو آپ لکھنے کے لیے استعمال نہیں کرتے) سے لومن کو اس طرح پکڑیں کہ وہ نیڈل لیس کنیکٹر کے قریب ہو لیکن اسے چھوئے نہیں۔
    4. اپنے ڈومیننٹ ہاتھ سے ایک اور الکوحل پیڈ اٹھائیں۔ الکوحل پیڈ سے لومن کے سرے کو 15 سیکنڈ تک رگڑیں۔ اس کے بعد الکوحل پیڈ پھینک دیں۔ لومن کو 15 سیکنڈ تک خشک ہونے دیں۔
    5. اپنے ڈومیننٹ ہاتھ سے ایک اور نیڈل لیس کنیکٹر اٹھائیں۔ اگر اس کے اوپر کور ہو تو اسے اتار دیں۔ نئے نیڈل لیس کنیکٹر کو لومن پر لگائیں۔
    6. نیڈل لیس کنیکٹر کے سرے پر ڈس انفیکشن کیپ لگائیں۔
  • نیا نیڈل لیس کنیکٹر لگانے کے بعد اپنے ڈاکٹر کو کال کریں۔ یہ یقینی بنانے کے لیے کہ آپ کو کوئی انفیکشن نہیں ہے آپ کے خون کا نمونہ لیا جا سکتا ہے۔

اگر ڈس انفیکشن کیپ گر جائے تو کیا کرنا چاہیے

جو ڈس انفیکشن کیپ گر جائے اسے پھینک دیں۔ اسے دوبارہ لومن پر نہ لگائیں۔

نئی ڈس انفیکشن کیپ لگانے کے لیے:

  1. اپنے ہاتھوں کو صابن اور پانی یا الکوحل والے ہینڈ سینیٹائزر سے صاف کریں۔
  2. اپنی ایمرجنسی کٹ سے نئی ڈس انفیکشن کیپ نکالیں۔ سڑپ سے کیپ نکالیں۔
  3. ایک ہاتھ سے نیڈل لیس کنیکٹر پکڑیں۔ اپنے دوسرے ہاتھ سے نئی ڈس انفیکشن کیپ کو نیڈل لیس کنیکٹر کے سرے پر آہستگی سے دبائیں اور موڑیں۔

نہانے کے لیے ہدایات

نہاتے ہوئے اس سیکشن میں دی گئی ہدایات پر عمل کریں۔ اپنے CVC کو پانی کے اندر (جیسے باتھ ٹب یا سوئمنگ پول میں) نہ رکھیں۔

CVC کے ساتھ نہانے سے متعلق مزید معلومات کے لیے درج ذیل ویڈیو دیکھیں۔

واٹر پروف کور استعمال کریں

آپ کیتھیٹر کے ساتھ نہا سکتے ہیں؛ اس کے لیے سنگل یوز واٹر پروف کور (جیسے AquaGuard®) استعمال کریں جو ڈریسنگ کو مکمل طور پر ڈھانپ دے۔ آپ واٹر پروف کورز آن لائن بھی خرید سکتے ہیں۔

ہر بار نہاتے ہوئے اپنی ڈریسنگ اور CVC کو نئے واٹر پروف کور سے مکمل طور پر ڈھانپیں تاکہ وہ گیلا ہونے سے محفوظ رہیں۔ واٹر پروف کور استعمال کرنے کے لئے:

  1. اس کے اوپر اور سائیڈ پر لگی سٹرپس اتار دیں۔
  2. اس کا اوپر والا کنارا ڈریسنگ کے اوپر رکھیں۔ اس بات کا خیال رکھیں کہ واٹر پروف کور پر موجود ٹیپ ڈریسنگ کو نہ چھوئے۔ کیونکہ یہ نہانے کے بعد واٹر پروف کور اتارتے ہوئے آپ کی ڈریسنگ بھی اتار سکتا ہے۔ کور کو اپنی ڈریسنگ کے اوپر پھیلائیں۔
  3. اور نیچے والی سٹرپ اتار دیں۔ اس بات کو یقینی بنائیں کہ واٹر پروف کور کا نیچے والا کنارہ آپ کی ڈریسنگ کے نیچے ہو اور آپ کے کیتھیٹر کے لومنز واٹر پروف کور کے اندر اور مکمل طور پر ڈھکے ہوئے ہوں۔ نیچے والے کنارے کو پھیلائیں۔

15 منٹ سے زیادہ نہ نہائیں۔ نیم گرم پانی سے نہائیں اور گرم پانی استعمال نہ کریں۔ اس سے واٹر پروف کور اترنے سے محفوظ رہے گا۔

نہانے کے بعد واٹر پروف کور کو اتارنے سے پہلے اسے خشک کریں۔ اگر ڈریسنگ گیلی ہو جائے تو اسے تبدیل کر دیں۔ “ڈریسنگ، نیڈل لیس کنیکٹر اور ڈس انفیکشن کیپس تبدیل کرنا” سیکشن میں دی گئی ہدایات پر عمل کریں۔

ایسا اینٹی سیپٹک سکن کلینر سلوشن استعمال کریں جس میں %4 chlorhexidine gluconate (CHG) ہو جیسے Hibiclens®

جب تک CVC لگا ہوا ہو آپ کے لیے انفیکشن کا خطرہ کم کرنے کے لیے اپنی جلد کو صاف رکھنا بہت ضروری ہے۔ CVC کے ساتھ نہانے دھونے کے لیے ہر روز %4 CHG والا سلوشن استعمال کریں۔

CHG ایک سخت جراثیم کش دوا ہے (جراثیم اور بیکٹیریا مارنے کے لیے استعمال ہونے والا لیکویڈ) جو استعمال کے بعد 24 گھنٹے تک جراثیم کا خاتمہ کرتا ہے۔ 4% CHG والے اینٹی سیپٹک سکن کلینزر سلوشن کے ساتھ نہانے سے CVC استعمال کرنے کے دوران انفیکشن کا خطرہ کم کرنے میں مدد ملتی ہے۔

آپ نسخے کے بغیر کسی مقامی فارمیسی سے یا آن لائن %4 CHG والا اینٹی سیپٹک سکن کلینزر سلوشن خرید سکتے ہیں۔ ڈسچارج ہوتے وقت آپ کو ہسپتال کی طرف سے بھی ایک چھوٹی بوتل فراہم کی جائے گی۔

4% CHG والا سلوشن استعمال کرنے کے لیے ہدایات

  1. Wash your hair with your usual shampoo and conditioner. Rinse your head well.
  2. Wash your face and genital (groin) area with your usual soap. Rinse your body well with warm water.
  3. Open the 4% CHG solution bottle. Pour some into your hand or a clean washcloth.
  4. Move away from the shower stream. Rub the 4% CHG solution gently over your body from your neck to your feet. Do not put it on your face or genital area.
  5. Move back into the shower stream to rinse off the 4% CHG solution. Use warm water.
  6. Dry yourself off with a clean towel.

Do not put on any lotion, cream, deodorant, makeup, powder, perfume, or cologne after your shower.

4% CHG سلوشن استعمال کرتے وقت یہ اہم نکات یاد رکھیں

  • 2 ماہ سے کم عمر بچوں پر CHG استعمال نہ کریں۔
  • اپنی نرس سے بات کیے بغیر %4 CHG سلوشن سے نہانے کے بعد عام صابن، لوشن، کریم، پاؤڈر یا ڈیوڈورنٹ استعمال نہ کریں۔ اگر آپ ہسپتال میں ہیں تو آپ کی نرس آپ کو ایک لوشن دے گی جسے آپ %4 CHG سلوشن استعمال کرنے کے بعد استعمال کر سکتے ہیں۔
  • 4% CHG سلوشن اپنے سر، چہرے، کانوں، آنکھوں، منہ، جنسی اعضاء یا گہرے زخموں پر استعمال نہ کریں۔ اگر آپ کو کوئی زخم ہے اور آپ فیصلہ نہیں کر پا رہے کہ آپ کو اس پر %4 CHG سلوشن استعمال کرنا چاہیے یا نہیں تو اپنے ڈاکٹر سے پوچھیں۔
  • اگر آپ کو کلوہیکسیڈین chlorhexidine سے الرجی ہے تو %4 CHG سلوشن استعمال نہ کریں۔
  • اگر %4 CHG سلوشن استعمال کرنے سے آپ کی جلد میں جلن ہوتی ہے یا الرجک ری ایکشن ہوتا ہے تو اس کا استعمال بند کر دیں اور اپنے ڈاکٹر کو کال کریں۔

اپنی پٹی، نیڈل لیس کنیکٹرز اور ڈس انفیکشن کیپس تبدیل کرنا

آپ کے لیے ڈریسنگ، نیڈل لیس کنیکٹرز اور ڈس انفیکشن کیپس تبدیل کرنا اور ہفتے میں کم از کم ایک بار CVC کو فلش کرنا ضروری ہے۔ عام طور پر، آپ کی اپوائنٹمنٹس کے دوران نرس آپ کے لیے یہ کام کرتی ہے۔ یہ کام سیکھنا بہت اہم ہے تاکہ ڈریسنگ، نیڈل لیس کنیکٹر یا ڈس انفیکشن کیپ کے خراب، ڈھیلا، گیلا، گندا ہونے یا گرنے کی صورت میں آپ یہ سب خود کر سکیں۔

اگر آپ کے ذہن میں کوئی سوالات ہیں تو اپنے ڈاکٹر سے رابطہ کریں۔

  • نہانے کے بعد باتھ روم میں اپنی ڈریسنگ تبدیل نہ کریں۔ شاور کی بھاپ کی وجہ سے یہ آپ کی جلد سے نہیں چپکے گی۔
  • ایگزٹ سائٹ کو کور کرنے کے لیے Tegaderm™ ڈریسنگ استعمال کریں۔ ڈریسنگ کو ہفتے میں ایک بار تبدیل کرنا ضروری ہے۔ اگر یہ گیلی، خراب یا گندی ہو جائے تو اسے ہفتے سے پہلے ہی تبدیل کر دیں۔ اسے اسی دن تبدیل کریں جس دن آپ اپنے نیڈل لیس کنیکٹرز اور ڈس انفیکشن کیپس تبدیل کرتے اور CVC فلش کرتے ہیں۔
  • اگر آپ کی ٹیگاڈرم ڈریسنگ کا جیل پیڈ سوج جائے تو اپنی ڈریسنگ تبدیل کر دیں۔ آپ جیل پیڈ کو اپنی انگلی سے آہستہ سے دبا کر چیک کر سکتے ہیں۔ اگر دبانے سے یہ دب جائے تو اس کا مطلب ہے کہ جیل پیڈ سوج گیا ہے اور آپ کو ڈریسنگ تبدیل کرنے کی ضرورت ہے۔ یہ تب ہوتا ہے جب آپ کو ڈریسنگ کے نیچے بہت زیادہ پسینہ آ رہا ہو۔
  • اگر آپ کو جلد کے مسائل ہو رہے ہیں، جیسے جلنا یا حساسیت تو آپ کی نرس مختلف قسم کی ڈریسنگ تجویز کر سکتی ہے۔ ایسی صورت میں، ڈریسنگ کو ہفتے میں ایک سے زیادہ بار تبدیل کرنا ضروری ہے۔
  • اس سے قطع نظر کہ آپ کون سی ڈریسنگ استعمال کر رہے ہیں، اگر یہ اترنا شروع ہو جائے یا گیلی ہو جائے تو اسے فورا تبدیل کر دیں۔ اس پر ایک اور ڈریسنگ کرنے یا ٹیپ لگانے سے اجتناب کریں۔

سامان

  • 1 ڈریسنگ چینج کٹ
  • نان سٹیرل دستانے
  • میڈیکل (پیپر) ٹیپ
  • ہر لومن کے لیے 1 ڈس انفیکشن کیپ
  • ایک مختلف ڈریسنگ یا نیڈل لیس کنیکٹر، اگر آپ کی نرس نے دی ہو تو
  • میز پر کھڑا ہونے والا آئینہ، جیسے میک اپ کے لیے استعمال ہونے والا آئینہ
  • حسب ضرورت سٹکی نیس دور کرنے والا سپرے یا پیڈز

ڈریسنگ تبدیل کرنے کے لیے سٹیرل پروسیجر

یاد رکھیں کہ نہانے کے بعد باتھ روم میں اپنی ڈریسنگ تبدیل نہ کریں۔

  1. ایک صاف کام کی جگہ تیار کریں۔ اپنی چیزیں نکالیں۔
  2. بچوں کی ڈریسنگ تبدیل کرنے کے لیے ریسورس میپ کھولیں: CVC جو اس ریسورس کے پرنٹ ورژن میں شامل ہے۔ اگر آپ How to Put on Your Sterile Gloves ریسورس بھی استعمال کر رہے ہوں تو اسے بھی کھولیں۔ ان سب کو ایسی جگہ پھیلائیں جہاں آپ انھیں دیکھ سکیں۔ ایک بار جب آپ پٹی تبدیل کرنا شروع کردیں تو آپ پھر آپ انھیں چھو نہیں سکتے کیونکہ اس سے سٹیرائل ٹیکنیک کام نہیں کرے گی۔

    آپ کی ڈریسنگ چینج کٹ میں پروسیجرل چیک لسٹ بھی موجود ہوتی ہے۔ یہ چیک لسٹ بنیادی معلومات کا ایک مختصر خلاصہ ہے۔ آپ اسے اس ریسورس کے ساتھ استعمال کرسکتے ہیں۔ اس کی 2 سائیڈز ہیں۔ نرس جو سائیڈز استعمال کرنے کی ہدایت کرے وہی استعمال کریں۔
  3. اپنے ہاتھ اچھی طرح صاف کریں۔
    • اگر آپ اپنے ہاتھ صابن اور پانی سے دھو رہے ہیں تو اپنے ہاتھوں کو گرم پانی سے گیلا کریں اور اینٹی بیکٹیریل صابن لگائیں۔ اپنے ہاتھوں کو کم از کم 20 سیکنڈ تک اچھی طرح رگڑیں اور پھر دھو لیں۔ اپنے ہاتھ پیپر ٹاول سے خشک کریں اور اسی تولیے سے نلکا بند کریں۔ اگر آپ کے پاس ڈسپوزیبل ٹاولز نہیں ہیں تو آپ کپڑے کے صاف تولیے بھی استعمال کر سکتے ہیں۔ جب وہ گیلے ہو جائیں تو انہیں تبدیل کر دیں۔
    • اگر آپ ہینڈ سینیٹائزر استعمال کر رہے ہیں تو اپنے ہاتھوں کو اس سے اچھی طرح کور کریں۔ اور انہیں خشک ہونے تک آپس میں رگڑیں۔
  4. آرام دہ پوزیشن میں بیٹھ جائیں۔ اگر ضرورت ہو تو CVC کو اپنے کپڑوں سے الگ کر دیں۔ کپڑے کھولیں یا اتار دیں تاکہ CVC نظر آ سکے۔
  5. اس بات کو یقینی بنائیں کہ CVC کلیمپ بند ہیں۔
  6. ڈریسنگ چینج کٹ کی بیرونی پیکنگ اتاریں۔ بالکل اوپر دو سرجیکل ماسک ہوں گے (شکل 2 دیکھیں)۔ آپ اور وہ شخص جو ڈریسنگ تبدیل کرنے میں آپ کی مدد کر رہا ہے دونوں کے لیے ماسک پہننا ضروری ہے۔ کٹ کے اندر کسی اور چیز کو ہاتھ نہ لگائیں۔
    شکل 2۔ ڈریسنگ چینج کٹ

    شکل 2۔ ڈریسنگ چینج کٹ

  7. نان سٹیرل دستانے پہنیں۔ اپنی پرانی ڈریسنگ اتار دیں، اس کے لیے ڈریسنگ کے ایک کنارے کو پکڑ اسے آہستہ آہستہ اتارتے ہوئے ایگزٹ سائٹ کی طرف لائیں۔
    • CVC کو اپنی جگہ پر رکھنے اور کھچاؤ سے بچانے کے لیے ڈریسنگ اتارنے کے دوران اپنا انگوٹھا یا شہادت کی انگلی جیل پیڈ پر رکھیں۔
    • ڈریسنگ اتارنے کے عمل کو آسان بنانے کے لیے آپ جیل پیڈ کے نیچے والے حصے کو سٹکی نیس دور کرنے والے پیڈ یا سپرے سے صاف کر سکتے ہیں۔
    • اس بات کو یقینی بنائیں کہ پورا جیل پیڈ ڈریسنگ کے ساتھ اتر جائے۔
    دستانے اور پرانی ڈریسنگ پھینک دیں۔
  8. چھوئے بغیر ایگزٹ سائٹ اور اس کے ارد گرد جلد کا معائنہ کریں۔ اگر آپ اپنی ڈریسنگ خود تبدیل کر رہے ہیں تو آئینے کے ذریعے اپنا معائنہ کر سکتے ہیں۔ اگر ایگزٹ سائٹ سرخ، کچی یا سوجی ہوئی ہو یا رس رہی ہو یا آپ کے CVC کے ارد گرد کا حصہ لیک ہو رہا ہے تو ڈریسنگ تبدیل کرنے کے بعد اپنے ڈاکٹر کو کال کریں۔
  9. باقی سامان دیکھنے کے لیے پیپر کی سفید سٹیرل تہہ کھولیں۔ اگر آپ کی نرس نے آپ کو استعمال کے لیے مختلف ڈریسنگ یا نیڈل لیس کنیکٹر دیا ہو تو اس کا پیکج اس طرح کھولیں کہ ڈریسنگ یا نیڈل لیس کنیکٹر سٹیرائل پیپر ڈریپ پر ہی گرے۔

    اس کے بعد سے الکحل پیڈ کے بغیراپنے CVC یا جلد کو ہاتھ نہ لگائیں۔ یہ آپ کے انفیکشن کا خطرہ کم کرے گا۔
  10. اپنے ہاتھ گرم پانی اور اینٹی بیکٹیریل صابن سے اچھی طرح دھوئیں یا ڈریسنگ چینج کٹ کی باہر والی سائیڈ سے ہینڈ سینیٹائزر پیکٹ استعمال کریں۔
  11. سٹیرل دستانے پہن کر پیکج اٹھائیں۔ احتیاط کریں کہ آپ سٹیرائل پیپر ڈریپ پر موجود کسی اور چیز کو ہاتھ نہ لگائیں۔

    How to Put on Your Sterile Gloves میں دی گئی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے اپنے ننگے ہاتھ سے سٹیرائل دستانے کی صرف اندرونی سائیڈ کو چھوتے ہوئے سٹیرائل دستانے پہنیں۔ دستانے پہننے کے بعد محتاط رہیں اور سٹیرل پیپر کی تہہ پر موجود اشیاء کے علاوہ کسی چیز کو ہاتھ نہ لگائیں۔
  12. سٹیرل پیپر کی دوسری تہہ نکال کر کھولیں اور اسے اپنے کام کی جگہ پر پھیلائیں۔ سٹیرل پیپر کی پہلی تہہ سے ہر چیز سٹیرل پیپر کی دوسری تہہ پر منتقل کریں۔
  13. تمام الکوحل پیڈز کھولیں اور ان کی ریپنگ اتاریں۔ الکوحل پیڈز کو دوبارہ سٹیرل پیپر کی دوسری تہہ پر رکھ دیں۔ ریپرز پھینک دیں۔
  14. اپنے ڈومیننٹ ہاتھ سے ChloraPrep™ ایپلی کیٹر اٹھائیں۔ سائیڈ پر پروں کو زور سے اکٹھا دبائیں جب تک کلک کی آواز نہ آئے (شکل 3 دیکھیں)۔
    تصویر 3۔ کلوراپریپ ایپلی کیٹر

    تصویر 3۔ کلوراپریپ ایپلی کیٹر

  15. اپنے نان ڈومیننٹ ہاتھ سے الکوحل پیڈ اٹھائیں۔ اور اسے اپنے CVC کو سینے سے دور رکھنے کے لیے استعمال کریں (تصویر 4 دیکھیں)۔ CVC کو براہ راست ہاتھ نہ لگائیں۔ صرف الکوحل پیڈ کو ہاتھ لگائیں۔
    تصویر 4۔ کیتھیٹر پکڑنا

    تصویر 4۔ کیتھیٹر پکڑنا

  16. ایگزٹ سائٹ سے شروع کرتے ہوئے، ایگزٹ سائٹ کے ارد گرد 2 انچ کے باکس کو کلورا پریپ سے اوپر نیچے اور دائیں بائیں رگڑیں (شکل 5 دیکھیں)۔ 30 سیکنڈ تک رگڑیں۔ اور کلورا پریپ کو پھینک دیں۔
    تصویر 5۔ ایگزٹ سائٹ کی صفائی

    تصویر 5۔ ایگزٹ سائٹ کی صفائی

  17. اب اس جگہ کو کم از کم 30 سیکنڈ تک خشک ہونے دیں۔ اس پر پنکھا جھلنے یا پھونک مارنے سے اجتناب کریں۔ CVC کو اپنے سینے سے دور پکڑے رکھیں۔
  18. اپنے ڈومیننٹ ہاتھ سے ایک اور الکوحل پیڈ اٹھائیں۔ اسے جہاں مرکزی کیتھیٹر لومنز میں تقسیم ہوتا ہے اس کے بالکل اوپر اپنا CVC پکڑنے کے لیے استعمال کریں۔ CVC کو اوپر اور اپنے سینے سے دور رکھیں۔
  19. اپنے نان ڈومیننٹ ہاتھ والا الکوحل پیڈ پھینک دیں اور نیا پیڈ اٹھائیں۔ الکحل پیڈ استعمال کرتے ہوئے، ایگزٹ سائٹ سے لومنز کے آخر تک جلد کو آہستہ آہستہ صاف کریں (شکل 6 دیکھیں)۔ اپنے CVC کو کھینچنے سے اجتناب کریں۔
    تصویر 6۔ لومنز کی صفائی

    تصویر 6۔ لومنز کی صفائی

  20. اپنے ہر لومن کے لیے سٹیپ 19 دہرائیں۔
  21. تمام لومنز صاف کرنے کے بعد آپ کو CVC جسم سے دور رکھنے کی ضرورت نہیں ہے۔
  22. اپنی جلد پرڈریسنگ کے سائز کے برابر مستطیل شکل میں نو اسٹنگ بیریئر فلم لگائیں۔ اسے ہوا میں پوری طرح خشک ہونے دیں۔ اس پر پنکھا جھلنے یا پھونک مارنے سے اجتناب کریں۔
  23. ڈریسنگ کے پچھلے حصے کو اتاریں (شکل 7 دیکھیں)۔ ڈریسنگ کو مثلث شکل میں اپنے CVC کے اوپر رکھیں۔ ایگزٹ سائٹ کو مرکزی پوائنٹ بناتے ہوئے جیل پیڈ کو اس کے اوپر رکھیں اور ڈریسنگ کے کناروں کو سیدھا کریں۔ ڈریسنگ کرتے ہوئے اسے کھینچنے سے اجتناب کریں۔
    تصویر 7۔ ٹیگاڈرم (Tegaderm) CHG ڈریسنگ

    تصویر 7۔ ٹیگاڈرم (Tegaderm) CHG ڈریسنگ

  24. باہر لگے پلاسٹک کے گول ٹیب کو پکڑیں اور ڈریسنگ کے چاروں طرف سے پلاسٹک اتار دیں (تصویر 8 دیکھیں)۔ یہ چیک کرنے کے لیے کہ یہ آپ کی جلد سے پوری طرح چپک گئی ہے ڈریسنگ کو باہر سے دبائیں۔
    تصویر 8۔ ٹیگاڈرم CHG ڈریسنگ کرنا

    تصویر 8۔ ٹیگاڈرم CHG ڈریسنگ کرنا

اب آپ کا ڈریسنگ کی تبدیلی کا سٹیرل والا مرحلہ مکمل ہو گیا ہے۔ نیڈل لیس کنیکٹرز اور ڈس انفیکشن کیپس تبدیل کرنے کے لیے اپنے دستانے اور ماسک پہنے رکھیں۔

نیڈل لیس کنیکٹرز اور ڈس انفیکشن کیپس کی تبدیلی

نئی ڈریسنگ کرنے کے بعد اپنے CVC کے ہر لومن کے نیڈل لیس کنیکٹر اور ڈس انفیکشن کیپ کو تبدیل کریں۔ یقینی بنائیں کہ آپ کے پاس ہر لومن کے لیے 3 الکوحل پیڈز ہوں۔

اگر آپ اپنی ڈریسنگ اس وجہ سے تبدیل کر رہے ہیں کہ وہ خراب، ڈھیلی، گیلی یا گندی ہے تو آپ کو اپنے نیڈل لیس کنیکٹرز اور ڈس انفیکشن کیپس تبدیل کرنے کی ضرورت نہیں ہے جب تک کہ وہ بھی گندے نہ ہوں۔

  1. اس بات کو یقینی بنائیں کہ آپ کے لومنز کے کلیمپ بند ہیں۔
  2. الکوحل پیڈ استعمال کرتے ہوئے اپنے نان ڈومینینٹ ہاتھ سے لومن کو اس طرح پکڑیں کہ وہ نیڈل لیس کنیکٹر کے قریب تو ہو لیکن اسے چھوئے نہیں (شکل 9 دیکھیں)۔
    تصویر 9۔ کیتھیٹر پکڑنا

    تصویر 9۔ کیتھیٹر پکڑنا

  3. اپنے ڈومینینٹ ہاتھ سے دوسرے الکوحل پیڈ سے 15 سیکنڈ تک کنکشن سائٹ کو صاف کریں۔ اسے 15 سیکنڈ تک خشک ہونے دیں۔
  4. پرانے نیڈل لیس کنیکٹر کو گھما کر اتار دیں۔ پرانے نیڈل لیس کنیکٹر اور الکوحل پیڈ کو پھینک دیں۔
  5. اپنے ڈومینینٹ ہاتھ سے نئے الکحل پیڈ سے 15 سیکنڈ تک لومن کے سرے کو صاف کریں۔ اسے 15 سیکنڈ تک خشک ہونے دیں۔
  6. اپنے ڈومینینٹ ہاتھ سے ایک نیا نیڈل لیس کنیکٹر اٹھائیں۔ اگر اس کے اوپر کور ہو تو اسے اتار دیں۔ نئے نیڈل لیس کنیکٹر کو گھما کر لومن پر لگائیں(شکل 10 دیکھیں)۔
    تصویر 10۔ نئے نیڈل لیس کنیکٹر کو لگانا

    تصویر 10۔ نئے نیڈل لیس کنیکٹر کو لگانا

  7. اگر آپ نے اپنا CVC فلش نہیں کرنا فورا, تو نیڈل لیس کنیکٹر کے سرے پر ڈس انفیکشن کیپ لگائیں۔
  8. اپنے دوسرے لومنز کے لیے سٹیپ 2 سے 7 کو دہرائیں۔
  9. اپنا ماسک اور دستانے اتاریں۔ اور انھیں پھینک دیں۔
  10. اپنے CVC کو کھچنے سے بچائیں۔ آپ کی نرس آپ کوبتائے گی کہ CVC کو محفوظ رکھنے کا سب سے آسان طریقہ کیا ہے۔ آپ یہ اقدامات کر سکتے ہیں:
    • اسے اپنی برا کے اندر دبا دیں (اگر آپ پہنتی ہیں تو)۔
    • اسے اپنے کپڑوں پر پن کر لیں۔ اس کے لیے:
      1. پیپر ٹیپ کا 3 انچ کا ٹکڑا کاٹ لیں۔
      2. ٹیپ کے کناروں کو فولڈ کر لیں (شکل 11 دیکھیں)۔ اتنی سٹکی ٹیپ چھوڑ دیں کہ آپ اسے اپنے تمام لومنز کے گرد لپیٹ سکیں۔
      3. پیپر ٹیپ کے سٹکی حصے والے لومنز اکھٹے کریں۔ سیفٹی پن فولڈ کیے ہوئے کناروں سے گزار کر اپنے کپڑوں کے اندر پن کر لیں۔
      تصویر 11۔ پیپر ٹیپ

      تصویر 11۔ پیپر ٹیپ

    اپنے CVC کو صرف اس صورت میں ڈھیلا چھوڑیں جب آپ کو یقین ہو کہ اسے کھنچنے کا خطرہ نہیں ہے۔

CVC فلش کرنے کا طریقہ

آپ کی کیئر ٹیم کا رکن آپ کو بتائے گا کہ آپ کو اپنا CVC فلش کرنے کی ضرورت ہے یا نہیں۔ اگر آپ نے CVC فلش کرنا ہو تو درج ذیل مراحل پر عمل کریں۔

سامان

  • 10 ملی لیٹر والی عام سیلین سلوشن سے بھری ہوئی سرنج/سرنجیں۔ آپ کو ہر لومن کے لیے 1 سرنج کی ضرورت ہو گی۔
  • نان سٹیرل دستانے
  • ہر لومن کے لیے 2 الکوحل پیڈز
  • ہر لومن کے لیے 1 ڈس انفیکشن کیپ

اپنا CVC فلش کرنے کے مراحل

  1. اپنی چیزیں نکالیں۔
  2. اپنے ہاتھ اچھی طرح صاف کریں۔
    • اگر آپ اپنے ہاتھ صابن اور پانی سے دھو رہے ہیں تو اپنے ہاتھوں کو گرم پانی سے گیلا کریں اور اینٹی بیکٹیریل صابن لگائیں۔ اپنے ہاتھوں کو کم از کم 20 سیکنڈ تک اچھی طرح رگڑیں اور پھر دھو لیں۔ اپنے ہاتھ پیپر ٹاول سے خشک کریں اور اسی تولیے سے نلکا بند کریں۔ اگر آپ کے پاس پیپر ٹاولز نہیں ہیں تو آپ کپڑے کے صاف تولیے بھی استعمال کر سکتے ہیں۔ جب وہ گیلے ہو جائیں تو انہیں تبدیل کر دیں۔
    • اگر آپ ہینڈ سینیٹائزر استعمال کر رہے ہیں تو اپنے ہاتھوں کو اس سے اچھی طرح کور کریں۔ اور انہیں خشک ہونے تک آپس میں رگڑیں۔
  3. نان سٹیرل دستانے پہنیں۔
  4. سرنج سے ہوا کے بلبلے نکالیں۔ اس کے لیے:
    1. سرنج کو ایسے پکڑیں کہ اس کی نوک اوپر کی طرف ہو۔
    2. اسے سائیڈ سے آہستگی سے تھپتھپائیں۔ ہوا کے بلبلے محلول کی سطح پر آ جائیں گے۔
    3. سرنج کی کیپ کو کھولے بغیر ہلکا سا ڈھیلا کریں۔
    4. سرنج کے پلنجر کو دبائیں جب تک کہ ساری ہوا باہر نہ نکل جائے۔
    5. کیپ دوبارہ بند کر دیں۔
  5. اپنے نان ڈومیننٹ ہاتھ سے ایک لومن اٹھائیں۔ اگر ڈس انفیکشن کیپ لگی ہوئی ہے تو اسے اتار دیں۔ اپنے ڈومیننٹ ہاتھ سے نیڈل لیس کنیکٹر کے سرے کو الکحل پیڈ سے 15 سیکنڈ تک صاف کریں۔ اسے 15 سیکنڈ تک خشک ہونے دیں۔
  6. سرنج سے کیپ اتاریں۔ کیپ پھینک دیں۔ لومن کو اپنے جسم سے دور رکھیں اور اس بات کو یقینی بنائیں کہ اس دوران کوئی بھی چیز نیڈل لیس کنیکٹر کے صاف سرے کو نہ چھوئے۔
  7. سرنج کو احتیاط سے نیڈل لیس کنیکٹر میں دھکیلیں اور گھڑی کی سمت (دائیں طرف) گھمائیں جب تک کہ کنکشن محفوظ نہ ہو جائے۔
  8. لومن سے کلیمپ اتاریں۔ سیلین انجیکشن لگانے سے پہلے یقینی بنائیں کہ ٹیوب میں کوئی موڑ یا رکاوٹیں نہ ہوں۔
  9. اپنا CVC فلش کرنے کے لیے دبائیں/رکیں کا طریقہ استعمال کریں۔
    1. جلدی سے سیلین کا ⅓ انجیکشن لگائیں۔ توقف کریں۔
    2. سیلین کا ایک اور ⅓ انجیکشن لگائیں۔ توقف کریں۔
    3. سیلین کا آخری ⅓ انجیکشن لگائیں۔
    اگر سیلین انجیکٹ نہ ہو رہا ہو تو، رکیں اور چیک کریں کہ لومن کا کلیمپ اترا ہوا ہے اور ٹیوب میں کوئی موڑ یا کوئی اور رکاوٹ تو نہیں ہے۔ دوبارہ سیلائن لگانے کی کوشش کریں۔

    اگر آپ پھر بھی سیلائن نہ لگا سکیں تو لائن کو فلش کرنے کے لیے اضافی دباؤ استعمال نہ کریں۔ مراحل 10 سے 12 پر عمل کریں اور پھر اپنے ڈاکٹر کو کال کریں۔
  10. لومن پر دوبارہ کلیمپ لگائیں۔
  11. سرنج کو لومن سے منقطع کرنے کے لیے اسے گھڑی کی مخالف سمت (بائیں طرف) گھمائیں۔ اور اسے پھینک دیں۔
  12. نیڈل لیس کنیکٹر کے سرے پر نئی ڈس انفیکشن کیپ لگائیں۔

ہر لومن کے لیے مراحل 4 سے 12 کو دہرائیں۔ کام ختم ہو جائے تو اپنا ماسک اور دستانے پھینک دیں۔ اپنے ہاتھ گرم پانی اور اینٹی بیکٹیریل صابن سے اچھی طرح دھوئیں یا ہینڈ سینیٹائزر استعمال کریں۔

اپنے معالج کو کب کال کی جائے

اپنے ڈاکٹر کو فوراً کال کریں اگر:

  • آپ کی ایگزٹ سائٹ کے ارد گرد سرخی یا سوجن ہے یا وہ رس رہی ہے۔
  • آپ کو 100.4 °F (38 °C) یا زیادہ بخار ہے۔
  • آپ کا کیتھیٹر ٹوٹ جائے یا رس رہا ہو۔
  • آپ کا نیڈل لیس کنیکٹر گر گیا ہو۔
  • آپ کے کیتھیٹر میں خون جمع ہو رہا ہو۔
  • آپ کا کیتھیٹر آپ کے پمپ سے منقطع ہو جائے۔
  • آپ کا کیتھیٹر پمپ سے جڑا ہوا ہو اور پمپ کا الارم بجنا شروع ہو جائے۔
  • آپ کے کیتھیٹر میں کوئی غیر واضح مسئلہ ہو۔

آخری اپ ڈیٹ شدہ

بدھ, اگست 11, 2021